1,418 total views, 1 views today

8 مارچ کو برصغیر پاک و ہند کی تاریخ میں ایک سنگِ میل کی حیثیت حاصل ہے۔
وکی پیڈیا کے مطابق 8 مارچ 1930ء کو گاندھی جی نے ہندوستان میں سول نافرمانی کی تحریک شروع کی۔
سول نافرمانی کی تحریک اتنی مؤثر نکلی کہ لارڈ ایڈورڈ اروین (Lord Edward Irwin) کی طرف سے نمائندگی والی حکومت نے گاندھی جی کے ساتھ تبادلۂ خیال کرنے کا فیصلہ کیا۔
"شہری نافرمانی تحریک” کو بند کرنے کے عوض برطانوی حکومت نے تمام سیاسی قیدیوں کو رہا کرنے کے لیے اپنی رضامندی دے دی۔ اس معاہدے کے نتیجے میں گاندھی جی کو انڈین نیشنل کانگریس کے واحد نمائندے کے طور پر لندن میں منعقد ہونے والے گول میز کانفرنس میں حصہ لینے کے لیے مدعو کیا گیا۔
تاریخ کی کتابوں میں رقم ہے کہ سول نافرمانی اور اس جیسی دیگر تحاریک نے برصغیر پاک و ہند میں انگریز کے قبضہ کو کمزور کیا۔