33 total views, 2 views today

وکی پیڈیا کے مطابق سلیم ناصر (Salim Nasir) پاکستان کے نامور ڈراما اور فلمی اداکار 15 نومبر 1944ء کو مردان کے ایک پشتون سید گھرانے میں پیدا ہوئے۔
اصل نام سید شیر خان تھا۔ پشتون ہونے کے باوجود اُردو پر کمال عبور حاصل تھا۔ یہی وجہ تھی کہ اکثر لوگ انہیں پشتو بولتا دیکھ کر حیران رہ جاتے تھے۔ گریجویشن کے بعد ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی کراچی میں بحیثیتِ افسر شعبۂ تعلقات عامہ لگ گئے، مگر اس شعبے کو اپنی منزل نہ سمجھتے ہوئے اداکاری کی طرف مائل ہو گئے۔اپنی فنی زندگی کا آغاز پاکستان ٹیلی وژن کے لاہور مرکز کے ایک ڈرامے ’’لیمپ پوسٹ‘‘ سے کیا۔ اس کے بعد تقریباً 400 انفرادی ڈراموں اور 27 سیریلز میں کام کیا۔ مشہور ٹی وی سیریلز میں ’’سفید سایہ‘‘، ’’جھوک سیال‘‘، ’’پل‘‘، ’’زنجیریں‘‘، ’’جزیرہ‘‘، ’’دستک‘‘، ’’بندش‘‘، ’’آخری چٹان‘‘، ’’اَن کہی‘‘، ’’آنگن ٹیڑھا‘‘ اور ’’جانگلوس‘‘ کے نام سرفہرست تھے ۔ دس فلموں میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے جن میں ایک پنجابی فلم بھی شامل تھی۔
19 اکتوبر 1989ء میں حرکتِ قلب بند ہونے کے سبب انتقال کرگئے۔ڈیفنس سوسائٹی کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔




تبصرہ کیجئے