29 total views, 1 views today

وکی پیڈیا کے مطابق انگریز ماہرِ حیاتیات چارلس ڈارون 19اپریل 1882ء کو لندن میں انتقال کرگئے۔
نظریۂ ارتقا پیش کرکے دنیا کی سوچ میں تبدیلی لے لانے میں کامیاب رہے۔ 12 فروری 1809ء کو شریوزبری انگلستان میں پیدا ہوئے۔ 16 سال کی عمر میں ایڈنبرا یونیورسٹی میں طب کے شعبے میں داخلہ لیا لیکن اسے یہ کچھ زیادہ پسند نہیں آیا۔ پھر کیمبرج میں دینیات کی تعلیم حاصل کرنے گئے۔ پڑھائی کی بجائے گھڑ سواری اور بندوق چلانا زیادہ اچھا لگتا تھا۔ ڈارون 1831ء میں 22 سال کی عمر میں دنیا کے گرد سفر پر روانہ ہوئے۔ اس لمبے سفر کے دوران میں قدیم قبیلوں سے ملے۔ بہت سارے فوسل دریافت کیے اور بہت زیادہ تعداد میں پودوں اور جانوروں کا مشاہدہ کیا۔ ان مشاہدات کو بڑی تفصیل سے قلم بند کیا۔ ان مشاہدات کی بنیاد پر بے شمار کتابیں لکھیں جن میں سب سے مشہور اصل الانواع (Origin Of Species) ہے۔ ڈارون کے نظریۂ ارتقا کو اب سائنس کی مسلمہ حقیقت کا درجہ حاصل ہے۔




تبصرہ کیجئے