112 total views, 1 views today

وکی پیڈیا کے مطابق ہندی میں آزاد نظم کے مؤجد سوریکانت ترپاٹھی نرالا 21 فروری 1896 ء کو بنگال میں پیدا ہوئے۔
ہندی شاعری کے چھایاوادی دور کے چار بڑے ستونوں میں سے ایک مانے جاتے ہیں۔ عصر حاضر کے دیگر شاعروں سے مختلف ہیں۔ شاعری میں تصور کا سہارا بہت کم لیا ہے اور حقیقت کو نمایاں رکھا ہے۔ ہندی میں آزاد نظم کے مؤجد مانے جاتے ہیں۔
1930ء میں شائع اپنے شعری مجموعہ ’’پریمل کے کردار‘‘ میں لکھتے ہیں:’’انسانوں کی آزادی کی طرح شاعری کی بھی نجات ہوتی ہے۔ انسان کی نجات اعمال کی پابندی سے چھٹکارا پانا ہے اور شاعری کی آزادی مصرعوں کی حکمرانی سے الگ ہو جانا ہے، جس طرح آزاد انسان کبھی کسی طرح دوسروں کے ساتھ منفی طرزِ عمل نہیں کرتا، اس کے تمام کام اوروں کو خوش کرنے کے لیے ہوتے ہیں پھر بھی آزاد ہوتا ہے ، اسی طرح شاعری کا بھی حال ہے۔‘‘
نرالا کی زندگی کی سب سے خاص بات یہ ہے کہ مشکل سے مشکل حالات میں بھی اُصول اور معاہدے کا راستہ نہیں چھوڑا، جدوجہد کی ہمت نہیں گنوائی۔ زندگی کا آخری حصہ الہ آباد میں گزرا۔ وہیں داراگنج محلے میں واقع رائے صاحب کی بڑی کوٹھی کے ٹھیک پیچھے بنے ایک کمرے میں 15 اکتوبر 1961ء کو انتقال کرگئے۔




تبصرہ کیجئے