108 total views, 1 views today

وکی پیڈیا کے مطابقتحریکِ آزادی کے ایک اہم رکن سردار عبدالرب نشتر 14 فروری 1958ء کو کراچی میں انتقال کرگئے۔
13 جون 1899ء کو پشاور میں کاکڑ افغان خاندان کے سربراہ مولوی عبدالحنان خان کے گھر پیدا ہوئے۔ابتدائی تعلیم مشن اسکول اور بعد کی سناتن دھرم ہائی اسکول ممبئی سے حاصل کی۔ بی اے جامعۂ پنجاب سے کیا۔ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے ایل ایل بی کی ڈگری 1925ء میں حاصل کی۔
1927ء سے 1931ء تک آل انڈیا کانگریس کے رکن رہے۔1929ء سے 1938ء تک پشاور میونسپل کمیٹی کے کمشنر رہے۔ بعد میں آل انڈیا مسلم لیگ میں شمولیت اختیار کی۔1932ء میں آل انڈیا مسلم لیگ کی کونسل کے رکن بنے ۔ آزادی کے بعد پاکستان کی پہلی کابینہ میں بطورِ وزیرِ مواصلات شامل ہوئے۔ بعد میں صوبہ پنجاب کے گورنر مقرر کیے گئے۔سیاست میں اصولوں کے پابند تھے۔ شاہی قلعہ لاہور کا دروازہ انگریزوں نے عوام کے لیے بند رکھا ہوا تھا۔ جب گورنر بنے، تو اسلامی فنِ تعمیر کے اس عظیم شاہکار کو عوام کے کھول دیا۔ وفات کے بعد محترمہ فاطمہ جناح کی اجازت سے مزار قائد کے احاطے میں خان لیاقت علی خان اور بابائے قوم کے ساتھ سپردِ خاک ہوئے۔




تبصرہ کیجئے