250 total views, 1 views today

وکی پیڈیا کے مطابق اُردو زبان کے ممتاز نقاد، جدید اُردو غزل کے اہم شاعر اور ادیب پروفیسر سحر انصاری 27 دسمبر 1941ء کو اورنگ آباد (دکن) میں پیدا ہوئے۔
1973ء میں بلوچستان یونیورسٹی سے بہ طورِاستاد پیشہ وارانہ سرگرمی کا آغاز کیا۔ بعد ازاں جامعۂ کراچی کے شعبۂ تدریس سے وابستگی اختیار کی۔
پہلی کتاب نمود 1976ء میں شایع ہوئی جسے بے حساب پزیرائی حاصل ہوئی۔ ’’خدا سے بات کرتے ہیں‘‘ ان کا دوسرا شعری مجموعہ ہے۔
حکومتِ پاکستان کی جانب سے ان کی علمی و ادبی خدمات کے اعتراف میں 2015ء میں ستارہ امتیاز سے نوازا گیا۔
نمونۂ کلام ملاحظہ ہو:
عجیب ہوتے ہیں آدابِ رخصتِ محفل
کہ اٹھ کے وہ بھی چلا جس کا گھر نہ تھا کوئی




تبصرہ کیجئے