18 total views, 1 views today

اردو نثر کے عناصر خمسہ میں سے ایک علامہ شبلی نعمانی18 نومبر 1914ء کو اعظم گڑھ میں انتقال کرگئے۔
پیدائش اعظم گڑھ ضلع کے ایک گاؤں بندول جیراج پور میں 4جون 1857ء کو ہوئی تھی۔
وکی پیڈیا کے مطابق آپ نے ابتدائی تعلیم گھر پر ہی مولوی فاروق چریاکوٹی سے حاصل کی۔ 1876ء میں حج کے لیے تشریف لے گئے ۔ وکالت کا امتحان بھی پاس کیا، مگر اس پیشہ سے دلچسپی نہ تھی۔ علی گڑھ گئے ، تو سرسید احمد خان سے ملاقات ہوئی، چناں چہ فارسی کے پروفیسر مقرر ہوئے ۔ یہیں سے شبلی نے علمی و تحقیقی زندگی کا آغاز کیا۔ پروفیسر آرنلڈ سے فرانسیسی سیکھی۔ 1892ء میں روم اور شام کا سفر کیا۔ 1898ء میں ملازمت ترک کرکے اعظم گڑھ آ گئے ۔ 1913ء میں دار المصنفین کی بنیاد ڈالی۔




تبصرہ کیجئے