61 total views, 1 views today

وکی پیڈیا کے مطابق رومانی نظم نگار اختر شیرانی 9 ستمبر 1948ء کو ٹونک (راجپوتانہ ) میں پیدا ہوئے ۔
4 مئی 1905ء کو ٹونک (راجھستان، برطانوی ہند) میں پیدا ہوئے۔ اصل نام محمد داود خان تھا۔ تمام عمر لاہور میں گزری۔ والد ’’پروفیسر حافظ محمود خان شیرانی‘‘ اورینٹل کالج لاہور میں فارسی کے استاد تھے ۔
اخترؔ کو بچپن سے ہی شاعری کا شوق تھا۔ منشی فاضل کا امتحان پاس کیا لیکن والد کی کوشش کے باوجود کوئی اور امتحان پاس نہ کرسکے اور شعروشاعری کو مستقل مشغلہ بنا لیا۔ ’’ہمایون‘‘ اور ’’سہیلی‘‘ کی ادارت کے بعد رسالہ ’’انقلاب‘‘ پھر ’’خیالستان‘‘ نکالا اور پھر ’’رومان‘‘ جاری کیا۔ ’’شاہکار‘‘ کی ادارت بھی کی۔
اردو شاعری میں اخترؔ پہلا رومانی شاعر ہے جس نے اپنی شاعری میں عورت سے خطاب کیا۔ عالمِ جوانی ہی میں اخترؔ کو شراب نوشی کی لت پڑ چکی تھی، جو آخرِکار جان لیوا ثابت ہوئی۔ لاہور میں انتقال ہوا اور میانی صاحب میں دفن ہوئے ۔




تبصرہ کیجئے