457 total views, 1 views today

وکی پیڈیا کے مطابق آزاد ہند کے پہلے وزیرِ تعلیم اور قومی رہنما ابوالکلام محی الدین احمد آزاد 22 فروری 1958ء کو دہلی میں انتقال کرگئے۔
اصل نام محی الدین احمد تھا۔ والدِ بزرگوار محمد خیر الدین انہیں فیروز بخت (تاریخی نام) کہہ کر پکارتے تھے۔
1888ء میں مکہ معظمہ میں پیدا ہوئے۔ والدہ کا تعلق مدینہ سے تھا۔ سلسلۂ نسب شیخ جمال الدین افغانی سے ملتا ہے جو اکبر اعظم کے عہد میں ہندوستان آئے اور یہیں مستقل سکونت اختیار کرلی۔
بیک وقت عمدہ انشا پرداز، جادو بیان خطیب، بے مثال صحافی اور ایک بہترین مفسر تھے۔ اگرچہ سیاسی مسلک میں آل انڈیا کانگریس کے ہم نوا تھے، لیکن دل میں مسلمانوں کا درد ضرور تھا۔ یہی وجہ تھی کہ تقسیم کے بعد جب علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے وقار کو صدمہ پہنچنے کا اندیشہ ہوا، تو مولانا آگے بڑھے اور اس کے وقار کو ٹھیس پہنچانے سے بچا لیا۔
مولانا آزاد کو بیسویں صدی کے بہترین اردو مصنفین میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔ کئی کتابیں لکھیں جن میں غبارِ خاطر، انڈیا ونس فریڈم (انگریزی)، تزکیہ اور ترجمان القرآن سرِفہرست ہیں۔ اس کے علاوہ ’’الہلال‘‘ نامی اردو کا ہفت روزہ اخبار جولائی 1912ء میں کلکتے سے جاری کیا۔




تبصرہ کیجئے