495 total views, 1 views today

وکی پیڈیا کے مطابق اردو کے ممتاز ناول نگار، افسانہ نگار، ڈراما نویس اور کالم نگار حمید کاشمیری 6 جولائی 2003ء کو کراچی میں انتقال کرگئے۔
آپ کا اصل نام عبد الحمید تھا۔ آپ ایک بے حد فعال ادیب تھے۔ آپ نے لاتعداد افسانے، پندرہ سے زیادہ ناول اور ٹیلی وژن کے لیے 50 سے زیادہ انفرادی ڈرامے، ڈراما سیریلز اور ڈراما سیریز تحریر کیں، جن میں ایمرجنسی وارڈ، روزن زنداں، شکستِ آرزو، اعتراف، کافی ہاؤس، لغزش اور ہفت آسمان کے نام شامل ہیں۔
ناولوں میں الاؤ، شکستِ آرزو، کشکول، پہلا آدمی، ادھورے خواب اور افسانوی مجموعے دیواریں اور سرحدیں شامل ہیں۔
آپ مختلف اخبارات میں کالم بھی لکھتے رہے جن میں حریت، مساوات، نصرت اور نگار شامل ہیں۔
آپ کو 1973ء میں ڈراما ’’پت جھڑ‘‘ کے بعد پر میونخ ڈراما فیسٹیول میں انعام دیا گیا۔ اس کے علاوہ پاکستان رائٹرز گلڈ، نگار اور انسانی حقوق کی تنظیم کی طرف بھی انعام دیا گیا۔ 2002ء میں اے آر وائی گولڈ انعام سے بھی آپ کو نوازا گیا۔




تبصرہ کیجئے