124 total views, 1 views today

مؤرخین اور ماہرینِ علم بشریات و عمرانیات نے کلچر کی اپنے اپنے انداز میں تعریف کی ہے۔
ایک تعریف تو یہ ہے کہ تہذیب شہروں میں پیدا ہوتی ہے۔ جب بھی شہر بسائے جاتے ہیں، تو شہروں میں مختلف پیشہ ور کاریگر اپنے فن اور ہنر کا مظاہرہ کرتے ہوئے معاشرے کی ضروریات کو پورا کرتے ہیں۔ کلچر کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ قبیلوں، دور چھوٹی چھوٹی بستیوں میں رہنے والی آبادیوں سے بھی پیدا ہوتا ہے۔ کیوں کہ اس کا تعلق لوگوں کی روزمرہ زندگی، ان کے رہن سہن اور رسم و رواج سے ہوتا ہے۔
دوسری طرف جو جرمن کرتے ہیں، وہ تہذیب اور کلچر کے درمیان فرق قائم کرتے ہیں، وہ یہ ہے کہ تہذیب کا تعلق مادی وسائل اور ٹیکنالوجی سے ہوتا ہے، جب کہ کلچر کا تعلق روحانیت سے ہوتا ہے جسے جرمن “Kultur” کہتے ہیں اور اس کی اہمیت ان کے ہاں تہذیب سے زیادہ ہے۔
تیسری تعریف یہ ہے کہ تہذیب ایک بڑا یونٹ ہے اور اس کے اندر کئی کلچر سما جاتے ہیں۔ اس صورت میں تہذیب اور کلچر آپس میں مل جاتے ہیں۔
(’’تاریخ کی خوشبو‘‘ از ’’ڈاکٹر مبارک علی‘‘، پبلشرز ’’تاریخ پبلی کیشنز‘‘، پہلی اشاعت، 2019ء، صفحہ نمبر 23 سے انتخاب)






تبصرہ کیجئے