659 total views, 2 views today

پطرس بخاری گورنمنٹ کالج لاہور کے پرنسپل تھے۔ وہاں ایک چوکیدار ان کے خلاف باتیں کیا کرتا تھا۔ ایک بار کسی استاد نے پطرس کو بتایا کہ فلاں چوکیدار آپ کے خلاف بہت کچھ بولتا ہے اور کہتا ہے کہ پطرس بخاری میرا کچھ نہیں بگاڑ سکتے۔
پطرس جواباً بولے: ’’وہ ٹھیک کہتا ہے۔ میں واقعی اس کا کچھ نہیں بگاڑ سکتا۔ اس کے پاس نہ دولت ہے، نہ عزت، نہ شہرت ہے، نہ عہدہ۔ مَیں اس کا کیا بگاڑوں گا؟‘‘ (ڈاکٹر علی محمد خان کی کتاب "کِشتِ زعفران” مطبوعہ "الفیصل” پہلی اشاعت فروری 2009ء، صفحہ نمبر 171 سے انتخاب)