242 total views, 1 views today

شاعری ایک خدائی عطیہ ہے۔ یہ ہر کسی کے بس کی بات نہیں۔ قدرت کی طرف سے ودیعت کردہ اس صلاحیت کو بعض لوگ اپنے وسیع مطالعہ اور پیہم ریاضت کے ذریعے جِلا بخشتے ہیں اور وہ اپنے خوب صورت اور پُرتاثیر الفاظ کے ذریعے شاعری کی ایک ایسی محبت آگیں دنیا تخلیق کرتے ہیں جس میں انسان زمان و مکاں کے تصور سے ماورا ہوجاتا ہے۔
اس قدرتی عطیہ سے متصف مظہر حسین عبدالغنی ایسا ہی ایک نوجوان شاعر ہے جس نے اپنے نازک احساسات اور دلی جذبات کو انگریزی زبان میں شاعری کے پیراہن سے آراستہ کیا ہے۔ اس کا پہلا شعری مجموعہ (Enchanting Verses of Love) ’’محبت کی دل نشیں نظمیں‘‘ کے نام سے حال ہی میں زیورِ طبع سے آراستہ ہوا ہے۔
مظہر حسین ضلع سیالکوٹ کے کوٹلئی کھوکھراں نامی گاؤں سے تعلق رکھتا ہے۔ اس نے ابتدائی تعلیم اپنے گاؤں میں حاصل کی ہے اور انگریزی زبان و ادب میں ماسٹر پنجاب یونی ورسٹی سے کیا ہے۔ اس وقت وہ روزگار کے سلسلہ میں سعودی عرب میں مقیم ہے۔مظہر نے اپنے شعری سفر کا آغاز کالج کے زمانۂ طالب علمی سے کیا ہے اور اپنے وسیع مطالعہ اور مسلسل ریاضت کے ذریعے اس میں اپنی ایک منفرد شناخت بنائی ہے۔ مظہر کو فطرت سے محبت ہے اور فطرت کی یہ محبت اسے تصوف اور عشق کی وادئ پُرخار میں لے گئی ہے۔ شاعری سے وابستگی اس کی جبلت میں تھی، یہی وجہ ہے کہ اس نے انگریزی ادب کا انتخاب کیا اور کالج ہی میں اپنے خیالات انگریزی زبان میں نظموں کی صورت میں قلم بند کرنا شروع کیے۔
مظہر حسین اپنے لہجے کا ایک ہمہ جہت منفرد شاعر ہے۔ اس کا شاعرانہ احساس دوسرے شاعروں سے کافی مختلف ہے۔ اس کی شاعری کا بنیادی محور محبت ہے۔ وہ فطرت کی رعنائیوں کے ساتھ ساتھ اپنے دل نشیں نظموں کے ذریعے محبت کی ایک ابدی دنیا تراشا کرتا ہے۔ اس کی شاعری میں تصوف کا رنگ جھلکتا ہے۔ وہ اپنی نظموں میں خالق سے قربت، روحانی ہم آہنگی اور روح کی آسودگی جیسے احساسات بیان کرتا ہے۔ وہ حیرت انگیز طور پر نادر تشبیہات، استعارات اور بلند تخیل کا استعمال نہایت فنکاری سے کرتا ہے۔




کتاب “محبت کی دل نشیں نظمیں” کا ٹائٹل اور بیک پیج۔ (فوٹو: فضل ربی راہیؔ)

مظہر حسین نے اپنی شاعری کے ذریعے محبت، فطرت کی نیرنگیوں، تصوف اور روحانیت پر مشتمل ایک ایسی دنیا تخلیق کی ہے جس میں انسانی زندگی کے مختلف پہلوؤں کا ہر رنگ جھلکتا ہے۔ وہ انسانیت پر یقین رکھتا ہے، وہ روحانی احساس کی شدت کو قربِ الٰہی کا ذریعہ سمجھتا ہے۔ مظہر حسین قدرتی مناظر کے شفق رنگوں کا اسیر ہے۔ وہ کائنات کا ہر خوب صورت منظر اپنے جادوئی قلم کے ذریعے نگینوں جیسے الفاظ کے ذریعے منقش کرتا ہے۔ وہ اپنے شاعرانہ تخیل پر مشتمل ایک ایسا جہاں آباد کرتا ہے جس میں محبت کے شیدائی تصورات کا ہاتھ پکڑ کرایک لازوال دنیا کے سفر پر نکل جاتے ہیں، جس کی منزل ایک ایسی دنیا ہوتی ہے جہاں فنا و بقا کا تصور مٹ جاتا ہے۔
مظہر حسین کا زیر نظر مجموعہ 105 نظموں پر مشتمل ہے جس میں کچھ نظمیں طویل اور کچھ مختصر ہیں۔ اس نے چند ہائیکو بھی لکھے ہیں جس میں اس نے مختصر لفظوں میں شاعرانہ فکر و نظر کی ایک وسیع دنیا تخلیق کی ہے۔
کتاب کا پیش لفظ ڈاکٹر سیما دیوی نے تحریر کیا ہے جب کہ اس کا دیباچہ ڈاکٹر فیلز ریوز نے لکھا ہے۔ ’’دل نشیں الفاظ‘‘ کے عنوان سے اس کا فنی و فکری جائزہ شجاعت علی راہیؔ نے لیا ہے۔ 160 صفحات پر مشتمل یہ خوب صورت شعری مجموعہ سوات کے نشرو اشاعت کے جانے پہچانے ادارہ شعیب سنز پبلشرز مینگورہ، سوات (فون: 0946-722517) نے نہایت نفیس اور جاذب نظر گٹ اَپ کے ساتھ شائع کیا ہے۔ انگریزی نظمو ں کی یہ کتاب”Enchanting Verses of Love” پشاور میں یونیورسٹی بک ایجنسی خیبر بازار، اسلام آباد میں سعید بک بینک جناح سپر مارکیٹ اور لاہور میں المیزان پبلشرز اردو بازار لاہور سے حاصل کی جاسکتی ہے۔

………………………………………………..

لفظونہ انتظامیہ کا لکھاری یا نیچے ہونے والی گفتگو سے متفق ہونا ضروری نہیں۔




تبصرہ کیجئے