90 total views, 1 views today

وصالِ یار سے دونا ہوا عشق
مرض بڑھتا گیا جوں جوں دوا کی
(مرزا علی اکبر مضطربؔ )
تذکرہ ’’خوش معرکۂ زیبا‘‘ (جلدِ اوّل)، سعادت علی خاں ناصر، مرتبۂ مشفق خواجہ، مجلسِ ترقیِ ادب، لاہور، اپریل 1970ء، صفحہ نمبر 293۔
مصرعِ اولیٰ یوں مشہور ہے:
’’مریضِ عش پر رحمت خدا کی‘‘
(’’اردو کے ضرب المثل اشعار تحقیق کی روشنی میں‘‘ از (تحقیق و تالیف) محمد شمس الحق، مطبوعہ ’’فکشن ہاؤس‘‘، اشاعت چہارم 2020ء، صفحہ نمبر 177 سے انتخاب)




تبصرہ کیجئے