219 total views, 1 views today

اشعار میں اعداد کا بالترتیب یا بلاترتیب ذکر کرنا صنعتِ سیاق الاعداد یا سیاقت الاعداد کہلاتا ہے، جیسے:
وائے قسمت ایک گالی کی ہوئیں دو تین چار
وقت گفتن جب زباں پہ اس کے لکنت آگئی
مذکورہ صنعت کی ایک اور مثال ملاحظہ ہو:
ایک، دو، تین، چار، پانچ، چھے، سات
آٹھ، نو، دس تلک تو تھی اک بات
(ابوالاعجاز حفیظ صدیقی کی تالیف ’’ادبی اصطلاحات کا تعارف‘‘ مطبوعہ ’’اسلوب، لاہور‘‘ اشاعتِ اول مئی 2015ء، صفحہ 301 سے انتخاب)




تبصرہ کیجئے