62 total views, 1 views today

ڈان اردو سروس کی ایک مفصل رپورٹ کے مطابق وجود میں جب آئرن کی کمی ہوجاتی ہے، تو اس کی کئی نشانیاں ظاہر ہوتی ہیں۔ جن میں سے ایک کچھ یوں ہے: ’’دل کی دھڑکن میں بے ترتیبی بھی آئرن کی کمی کی ایک علامت ہوسکتی ہے۔ ہیموگلوبن کی سطح میں کمی کے نتیجے میں دل کو زیادہ کام کرنا پڑتا ہے جس سے دل کی دھڑکن غیر معمولی ہوجاتی ہے یا ایسا محسوس ہوتا ہے کہ دل بہت تیز دھڑک رہا ہے۔ سنگین معاملات میں ہارٹ اٹیک کا بھی خطرہ پیدا ہوتا ہے۔‘‘




تبصرہ کیجئے