34 total views, 1 views today

سوات میں نوکری کے لیے 14 لاکھ روپے سے ہاتھ دھونے والے نوجوانوں نے لائیو سٹاک کے اہلکار واصف احمد کی گرفتاری کا مطالبہ کردیا۔ واصف نے وزیر اعلا اور ان کے بھائی کا نام استعمال کرکے نوکری کا جھانسہ دیا۔ہمیں انصاف فراہم کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار کوزہ بانڈئی کے متاثرہ نوجوانوں عرفان اللہ اور جاوید علی نے میڈیاکوتفصیلات بتاتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ برہ بانڈئی کے رہائشی نواب نے ہمیں سرکاری اہلکارواصف سے ملوایا جس نے ہماری مجبوری سے فائدہ اٹھاتے ہوئے نوکری دلانے کے عوض سات لاکھ روپے فی کس دینے کا مطالبہ کیا۔ اب ایک سال گزرنے کے باوجود نوکری ملی اور نہ ہمیں ہمارے سات سات لاکھ روپے ہی واپس کیے گئے ہیں ۔متاثرہ نوجوانوں کا کہنا ہے کہ جب ہم نے اپنی رقم کا مطالبہ کیا تو واصف نے جواباً کہا کہ اس میں میرے صرف 25 ہزار روپے ہیں۔ باقی پیسے تو وزیراعلا کے بھائی اور دیگر افسران لیتے ہیں۔ نوجوانوں کے مطابق، جب ہم نے معلومات کیں تو واصف احمد فراڈی نکلا۔ ہمیں جھانسا دے کر لوٹ لیاگیاہے ۔انہوں نے یہ بھی کہاکہ ہم نے اینٹی کرپشن میں درخواست دی ہے۔ اس حوالہ سے پولیس اسٹیشن میں بھی رپورٹ درج کرائی ہے ۔انہوں نے کہاکہ ہمارے ان پیسوں سے وزیراعلا کے خاندان کا کوئی تعلق نہیں بلکہ واصف نے ہمیں جھانسا دیا ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جائے۔واصف کو گرفتار کرکے ان سے ہماری لوٹی رقم واپس دلائی جائے۔
…………………………………………………………………..
لفظونہ انتظامیہ کا لکھاری یا نیچے ہونے والی گفتگو سے متفق ہونا ضروری نہیں۔ اگر آپ بھی اپنی تحریر شائع کروانا چاہتے ہیں، تو اسے اپنی پاسپورٹ سائز تصویر، مکمل نام، فون نمبر، فیس بُک آئی ڈی اور اپنے مختصر تعارف کے ساتھ editorlafzuna@gmail.com یا amjadalisahaab@gmail.com پر اِی میل کر دیجیے۔ تحریر شائع کرنے کا فیصلہ ایڈیٹوریل بورڈ کرے گا۔






تبصرہ کیجئے